مجرم تے قانون

مجرم تے قانون
تحریرمحمداظہر حفیظ
اسلام علیکم میرے سادے دوستو
ملک مجرم قانون منصف جیل عدالت سزائیں معافیاں سب وھی ھیں تو آپ کس بات پر خوش ھیں۔
یہاں صرف کمزور کو سزا ھوتی ھے کبھی صوفی محمد باعزت بری کبھی مولانا عزیز باعزت بری کبھی نوازشریف بری کبھی آصف علی زرداری بری کبھی مشرف بری کبھی جرنل درانی بری کبھی ضیاءالحق بری ایوب خان بری یہ اسلام آباد ھے شہر امام بری یہاں ھر ویگن ھر دل پر لکھا ھے بری بری سرکار بری اس لئے اسلام آباد کے سب مجرم انکے صدقے بری ھوجاتے ھیں کاش میاں محمد بخش کا مزار لہڑی کی بجائے اسلام آباد میں ھوتا تو سب ھی کہتے 
پھس گئی جان شکنجے اندر جوں ویلن وچ گنا رو نوں کہو ھن رھو محمد ھن جے روے تے مننا
جب تک سب بدلتا نہیں ھے سب جھوٹ ھے یہ سزائیں بھی ادائیں بھی جفائیں بھی ۔
میں اور میرا بھائی ایک سات مرلے کے گھر میں رھتے ھیں جو والدین کی طرف سے وراثت میں ملنے والی اکلوتی جائیداد ھے ۔
سینکڑوں ھزاروں کنالوں کے محلات میں رھنے والا میرے مسائل کیسے حل کرے گا اور اس کو کیسے پتہ چلے گا میرے مسائل ھیں کیا مجھے پتہ چلا کچھ عرصہ پہلے یہ ممبر نیشنل اسمبلی اور صوبائی اسمبلی کا کام قانون بنانا اور توڑنا ھے کیونکہ وہ اچھی طرح قانون کو جانتے ھیں اس کے علاوہ ان کی کوئی ذمہ داری نہیں ھے تو محترم دوستو کیسے سوچتے ھوئے انکے بنائے ھوئے صدر، آرمی چیف، چیف جسٹس،گورنر،وزیر، مشیر،جج کیسے انکے خلاف فیصلے دیں گے ۔
خوشیاں نہ منائیں یہ ایسی سزاوں کے عادی ھیں سزالینے اور معاف کروانے کے کبھی انکو خاندان اور ملازمین کے ساتھ ملک بدر کیا جاتا ھے بھلا ایسی ھوتی ھیں سزائیں ۔
عدالتیں فوجی ھوں یا غیر فوجی اگر وہ ایسی سزائیں دیں گی تو مزا تو آئے گا۔ راو انور کے گھر کو سب جیل قرار دے دیا کیوں کیا جیل میں جگہ نہیں ھے الطاف حسین صاحب خود ساختہ جلاوطنی ملک میں کیا خطرہ ھے ڈار صا حب خود ساختہ بیماری جہانگیر ترین بیمار ملک سے باھر نواز شریف بیوی بیمار ملک سے باھر اللہ سب کو شفائے کاملہ عطا کریں اور پاکستان واپس لائیں وہ ایک گورنر تھے سندھ طویل مدت والے ڈاکٹر عشرت العباد صاحب ملک سے باھر دھری شہریت والے سرکاری نوکری نہیں کر سکتے پر حکومت کر سکتے ھیں سب کے بچے ملک سے باھر اور غیرملکی شہریت اور نئے پرانے پاکستان بنانے ھیں نواز شریف صاحب کے بچے عمران خان صاحب کے بچے جہانگیر ترین صاحب کے بچے اور پھر مذاق ھمارے ساتھ اسد عمر صاحب پی ٹی آئی بھائی ن لیگ گورنر۔ظفر علی شاہ صاحب ن لیگ اب پی ٹی آئی داماد زلفی بخاری صاحب پی ٹی آئی شیخ رشید صاحب جونیجو لیگ ن لیگ ق لیگ اور اب عوامی لیگ راجہ بشارت صاحب ن لیگ ق لیگ پی ٹی آئی حنیف عباسی صاحب جماعت اسلامی ن لیگ اور یہ سب کیا چل رھا ھے وھی لوگ وھی قانون وھی جج وھی نیب ایک نیب پہلے بھی تھا جس نے آصف علی زرداری صاحب کو پکڑا تھا پھر ایک نیب نے ڈاکٹر عاصم صاحب کو پکڑا پھر پرنسپل سیکڑی فواد صاحب کو پکڑا پھر یہ کون لوگ ھیں جو اتنے آسان فیصلے کرتے ھیں کہ عمل درامد سے پہلے ھی فیصلے واپس ھو جاتے ھیں۔ نیب نے علیم خان صاحب اور سردار ایاز صادق صاحب سے ضمنی الیکشن کے اخراجات کا حساب کیوں نہیں پوچھا کہ کیسے اربوں روپے خرچ ھوئے اور کہاں سے آئے اور اتنے پیسے لگا کر ایک ایم این اے بنتا ھے تو آپ اس سے دیانت داری کی امید کیسے کر سکتے ھیں۔ چیف جسٹس بحالی تحریک پر پیسہ کس کا لگا اور کتنا لگا پوچھا کیوں نہیں گیا زلزے کے بعد ادارے بنے نیا بالاکوٹ آباد کیا جائے گا کہاں آباد ھوا پیسے کہاں گئے وہ جرنل صاحب کی سربراھی میں چلنے والا ادارہ کہاں گیا یہ بحریہ ٹاون، ڈی ایچ اے، یہ سب کیا ھیں راولپنڈی کی انٹری پر گیٹ کیوں بن رھے ھیں ای ٹیگ کیوں لیں 1500 کیوں ادا کریں ای ٹیگ والی گاڑی کی گارنٹی کون دے گا ھر دفعہ ڈرائیور وھی ھے کیا سسٹم بنا رھے ھیں۔
پشاور میٹرو اسلام آباد ائیرپورٹ میٹرو کا کام بند کیوں ھے
سب اپنی اپنی جگہ پر کام کیوں نہیں کر رھے۔ 
سب ٹیکس دینے کے باوجود میں محفوظ کیوں نہیں ھوں 80 فیصد ممبران نیشنل اسمبلی سے زیادہ میں انکم ٹیکس دیتا ھوں پھر میرے گھر پانی کیوں نہیں آتا۔ مجھے ٹینکر کیوں خریدنا پڑھتا ھے صدر، وزیراعظم،وزیر،فوج،عدلیہ،میڈیا،مولوی،سب اپنے اپنے کام پر توجہ کیوں نہیں دیتے ایک دوسرے کے کام میں مداخلت کیوں کرتے ھیں مجھے عمران خان صاحب سے بہت امید وابستہ ھے لیکن پہلے وہ میرے ھمسائے میں سات مرلے کے گھر میں شفٹ ھوں تبدیلی کا آغاز کریں میڈ ان پاکستان کار استعمال کریں میرا ووٹ انکا ھے اگر وہ اور کوئی بھی دوسرا خود ساختہ لیڈر ایسا نہیں کر سکتا تو پلیز میرے سے نیا پاکستان کی بات مت کریں سب سے پہلے خود بدلیں دوسرا بدلنے والا میں ھونگا ھر پاکستانی ھوگا قانون ھوگا انصاف ھوگا حق حقدار کو ملے گا۔مجرم کو اصل سزا ملے گی انشاءاللہ
پاکستان زندہ باد

Prev قدرتی آفات 
Next میرا آرٹسٹ

Leave a comment

You can enable/disable right clicking from Theme Options and customize this message too.