میری تصویریں

میری تصویریں
تحریر محمد اظہر حفیظ
میرے ابا جی مرحوم اکثر کہتے تھے یار صاحب تم اتنا سفر کرتے ھو، دور دور جاتے ھو، تصویریں بناتے ھو، پر کسی بھی تصویر میں تو خود نظر نہیں آتے۔ ابا جی یہ سب تصویریں میں ھی ھوں آپ غور تو کریں میں آپ کو نظر آجاوں گا، تو وہ ھنسنے لگ جاتے۔ اباجی میں نے سنا ھے ایک تصویر میں دو لوگ ھوتے ھیں ایک فوٹوگرافر اور دوسرا اسکا مضمون۔ اچھا صاحب جیسے تو سمجھتا ھے۔ 
میرا خیال ھے میں ساری زندگی جاگتے میں اپنے خوابوں کو عملی جامہ پہنانے میں لگا رھا اور سو ھی نہیں سکا، کئی خواب ادھورے رہ گئے اور کئی تو نہ سونے کی وجہ سے میں پورے دیکھ بھی نہیں پایا، میں نے اپنی زندگی کا زیادہ حصہ تصویریں بناتے گزار دیا، جن لمحوں کو مجھے خود دیکھنا چاھیئے تھا انکی تصویریں بنا کر دنیا کو دکھاتا رھا اور خود دیکھنے سے محروم رھا آج دل میں خیال آتا ھے شاید ابا جی سہی کہتے تھے یار ان تصاویر میں تو خود کہاں ھے نہ ان تصاویر میں میں خود آسکا اور نہ ھی ان لمحات کو دیکھ سکا۔ میرا نیشنل کالج آف آرٹس کا کلاس فیلو ندیم افتخار کہتا تھا یار تم اپنے سٹوڈیو کا نام لاسٹنگ میموریز(Lasting Memories) رکھنا پر میرا خیال ھے اسکا نام لوسٹنگ میموریز ( Losting memories ) ھونا چاھیئے۔ جو لمحے ھم نے کھو دیئے۔ 
میرے سب جاننے والوں کی خواھش ھوتی ھے کہ میں تقریب میں کیمرہ لیکر جاوں پر میں کیوں چند تصاویر کے پیچھے اپنی تقریب خراب کروں اس لئے میں ھمیشہ کیمرہ کے بغیر ھی جاتا ھوں اور مزے لیتا ھوں اس تقریب کے اور اس کا حصہ بن جاتا ھوں۔
لمحے وہ ھی ھیں جو آپ نے جی لیئے ناکہ وہ جو آپ نے دیکھے ھی نہیں۔
جیئیں زندگی تصویر کوئی اور بنالے گا۔
کالاباغ اور ھلینی میں ماڑی پیٹرولیم کی ریگ لگی ھوئی تھی پاکستان کا سب سے گہرا تیل کا کنواں کھودا جارھا تھا۔ جب ریگ پر تصاویر بنانے گیا تو دل کیا اس بیش قیمت تقریبا ایک ارب روپے کی ریگ پر اپنی بھی یاداشت ھونی چاھیئے تو یاد آیا صہیب بھائی کراچی کیمرہ سینٹر والے نے ایک سیلفی سٹک تحفہ دی تھی بیگ سے نکالی اور اپنی اور اپنے دوستوں کے ساتھ سیلفی بنائی اور یہ میری پہلی اپنی تصویر تھی جو میں نے چند سال پہلے بنائی اور اس میں میں بقول ابا جی نظر بھی آیا، 
ناصر نعیم بہت اچھے دوست ھیں اکثر کہتے ھیں بھائی جی جب پڑھاتے ھیں تو اس کی ویڈیو بنایا کریں اوروں کے بھی کام آئے گی اور ریکارڈ میں بھی آجائے گی جی اچھا اور اظہر نیاز صاحب بہت محترم دوست ھیں بڑے بھائی ھیں کئی دفعہ حکم دے چکے تم مجھے ملو اپنا یو ٹیوب چینل بناو اور پیسے کماو پر مجھے تو صرف دنیا کو یہ دکھانا ھے کہ دوستو یہ میرے اللہ کی بنائی دنیا ھے یہ اسکی بنائی مخلوق ھے اور کچھ نہیں ھے کفر کے فتوے لگانا بند کرو اور دنیا کو دیکھو۔ کتنا ھی گنہگار ھوگا وہ شخص جو رب کی بنائی دنیا ان سب کو دیکھاتا ھے جو اس کی سکت نہیں رکھتے مالی لحاظ سے اور جسمانی لحاظ سے ،فوٹوگرافر سارے جہاں کا سفر کرتے ھیں بھوکے پیاسے رھتے ھیں اور رب کی بنائی دنیا کی خوبصورتی اس کے بندوں کو دکھاتے ھیں۔ مجھے کوئی بتلائے یہ کام عبادت کا درجہ رکھتا ھے یا پھر کفر کا۔ فیصلہ آپکا ھے میں تو اپنا فیصلہ کرچکا، جو سیاچین نہیں گیا ھم جان جوکھوں میں ڈال دنیا کو دکھاتے ھیں جو نیلم ویلی نہیں گیا ھم دنیا کو دکھاتے ھیں ۔ میں اور میرے جیسے کئی گنہگار اس عبادت پر لگے ھوئے ھیں اور لگے رھیں گے۔ میرے دوست واصف آفریدی،خرم نون فیشن کی تعلیم اعلی اداروں سے حاصل کرکے دین کی طرف چلے گئے اور واصف آفریدی دودھ بیچتا ھے اور خرم نون سعودیہ میں نوکری کرتا ھے اور دونوں سے بہتر میری چھوٹی بہن جو واصف آفریدی کی بیوی ھے وہ فیشن انڈسٹری کی غلاظت کا حصہ ھے اس نے اس فیلڈ کو نہیں چھوڑا اور آج دنیا کیلئے بہترین عبائے ڈیزائن کرتی ھے عورت کو پردے کا سامان مہیا کرتی ھے فرق سوچ اور زاویے کا ھے تعلیم وھی ھے ۔تعلیم اور روزگار بدلنے کی بجائے سوچ بدلئے تبھی دنیا بدلے گی۔ میری بہن زینب آفریدی تجھے میرا سلام۔ اللہ آپ کو مزید ھمت اور حوصلہ دیں امین۔ 
میں اپنی تصاویر کی ساتویں نمائش کرنے جارھا ھوں الحمدللہ۔ تصویریں،فریم،گیلری سب اچھے سے اچھا کی کوشش کی ھے۔ 
فریم میں شیشے نہیں لگائے کیونکہ کچھ دوستوں کا اعتراض ھوتا ھے شیشہ اچھی کوالٹی کا نہیں ھے مجھے اچھا لگتا ھے جب کوئی تصویر پر بات کرے نا کہ فریم کے نقص کی تصاویر متعلق تمام سچ سننے کیلئے میں تیار رھتا ھوں۔ آپ آیئے راھنمائی کیجئے۔ 
سب کو دعوت عام ھے آیئے میری تصاویر دیکھیے اور فیصلہ کیجئے میں ان میں ھوں یا نہیں ۔ 
میرے پاس اس سوال کا کوئی جواب نہیں چائے کا انتظام ھے اور ساتھ کھانے میں کیا ھے میرے سارے سوال سارے جواب فوٹوگرافی کے متعلق ھیں ۔ اس نمائش کیلئے میں نے چائنہ، کینیا اور پاکستان کے کئی علاقوں کا سفر کیا اس میں سے چند تصاویر منتخب کی اور نمائش کیلئے لگادیں ھیں آئیے فوٹوگرافی اور اس کی تکنیک پر بات کرتے ھیں اس کے موسموں رنگوں کی بات کرتے ھیں فضول باتیں پھر کبھی سہی اور چائے جب کہیں گے پلا دیں گے ورنہ چائے پی کر بل مجھے ارسال کر دیجئے میں ادا کرنے کا پابند ھوں۔
تصاویر کی نمائشیں اندرون ملک اور بیرون ملک ھونی چاھیں یہ ایک حوصلہ افزاء بات ھے۔ پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس، گیلری 6،ھنرکدہ،کامسیٹس آرٹ گیلری،فرینچ کلچر سینٹر،نوماڈ آرٹ گیلری، آپ سب ک شکریہ کہ آپ نے مجھے یہ مواقع مہیا کیئے، اور مجھ پر اعتماد کیا، میں نے بھی پوری کوشش کی کہ آپکو مایوس نہ کروں شکریہ میری فیملی کا دوستوں کا جنہوں نے میری حوصلہ افزائی کی اور مجھے کام کرنے کا موقع مہیا کیا۔ ھر کامیاب مرد کے پیچھے ایک عورت ھوتی ھے میرے خیال میں وہ عورتیں دو ھیں ایک تو میری امی اور دوسری میرے بچوں کی امی ۔ انکا بھی شکریہ اور دو مرد بھی شامل حال رھے میرے اس سارے کام میں ایک میرے ابا جی اور دوسرے میرے بھائی جنہوں نے مجھے کسی چیز کی کمی نہیں ھونے دی نہ ھمت کی اور محنت کی۔
شکریہ حاجی اکرام صاحب اکرام ڈیجیٹل لیب لاھور۔ شکیل ڈار صاحب فیوجی پاکستان،عابد صاحب،اسلم صاحب جمبو کلر لیب راولپنڈی،
عبد الجبار صاحب عبدالرزاق صاحب آرٹ فلو فریمنگ لوک ورثہ اسلام آباد جنہوں نے میری ساری نمائشوں کی فریمنگ کی، کراچی کیمرہ سینٹر ،منیر فوٹوز، نائیکون پاکستان جنہوں نے ھمیشہ ساتھ دیا،
شکریہ ضمن ارمغان حاضر میرا دوست جس نے ھمیشہ میری گالیوں کے ساتھ راھنمائی کی اور میرا کام بہتر کرنے میں مدد کی ۔ میرا جگر سید آصف حسین زیدی اللہ آپ کو صحت کاملہ عطا فرمائیں امین بستر پر پڑا شخص جس نے مجھے فوٹوگرافر بننے میں ساری راھنمائی کی،آفتاب افضل بھائی اور فائق بھائی مجھے فوٹوگرافی کی پہلی کتاب تحف دینے کا پیار کا شکریہ۔
احمر رحمن میری بیوہ تیرا بھی شکریہ ساری زندگی میرے دکھ کو اپنا دکھ سمجھا،
تمام فوٹوگرافرز اور استاد جن سے میں نے سیکھا اور راھنمائی لی، میاں مجید صاحب،جاوید صدیق صاحب، عمیر غنی صاحب،رزاق وینس صاحب،طارق سلیمانی صاحب،گلریز غوری صاحب،ابرار چیمہ صاحب، عاطف سید صاحب،کامران سلیم صاحب،آغا رضوان صاحب،عمران مسکین صاحب، راجہ عامر صاحب،آئی اے رحمن صاحب،جمال شاہ صاحب،ساجدہ ونڈل صاحبہ،دبیر صاحب،طلعت دبیر صاحبہ،ایم ایچ جعفری صاحب،ڈاکٹر جاوید چاولہ صاحب،آصف شیرازی صاحب،اشتیاق احمد بلو صاحب،ناصر سعید صاحب،حاجی راحت صاحب،حاجی فرحت صاحب، نگین حیات صاحبہ،ڈاکٹر ارجمند فیصل صاحب احسان علئ قریشی صاحب،فخر حمید صاحب،برگیڈیئر مجتبی ترمذی صاحب،اظہر ترمذی صاحب،نذیر وڑائچ صاحب سید اختر صاحب،اعظم جمال صاحب،عاصم اختر صاحب،راحت ڈار صاحب،فواد فاروقی صاحب اور میرے تمام شاگردوں کا بھی شکریہ جنہوں نے مجھے سیکھانے میں مدد کی۔ بتانے کا مقصد یہ ھے میں شاید اپنی تصویروں میں نہیں ھوں پر یہ سب احباب آپ کو میری تصویروں میں نظر ائیں گے، آئے تصاویر دیکھئے اور ان سب کو میری تصویروں میں ملیے۔

Prev سسک سسک کر رونا اور بس مسکرانا
Next میں تھکتا ضرور ھوں پر ھارتا نہیں

Leave a comment

You can enable/disable right clicking from Theme Options and customize this message too.