Monthly:June 2019

پینڈو

پینڈو تحریر محمد اظہر حفیظ میری دوست کہتی ھے کہ تم اپنے گاوں کو بہت مس کرتے ھو تمھاری ھر دوسری تحریر میں تمھارے گاوں کا ذکر ھوتا ھے۔ بلکل ایسا ھی ھے ۔ میں گیارہ سال کی عمر میں شہر آگیا اور شہر کا ھی ھوکر رہ گیا۔ شہر کی روشنیاں، رنگینیاں،ھلچل اور پھر اس میں گم ھوتا گیا۔ نیشنل کالج آف آرٹس میں بھی میں ایک پینڈو بچہ ھی تھا۔ مجھے یاد ھے کچھا تو بہت پہنا شاید […]

Continue Reading

اللہ 

اللہ  تحریر محمد اظہر حفیظ اللہ کو میں نے بارھا دیکھا ھر طرف ھر لمحہ دیکھا۔ میرے اللہ کے فضل ھی ھیں کرم ھی ھیں جو سب دیکھا۔  کبھی پھول کی تصویر بناتے وقت کبھی کسی کو بھوک میں مسکراتے ھوئے اور کبھی زیادہ کھانے پر لوگوں کو پھکیاں کھاتے ھوئے مجھے میرے اللہ نظر آئے ۔ کبھی صحیح سلامت سفر کرتے ھوئے اور کبھی حادثے سے محفوظ رھتے ھوئے مجھے میرے اللہ نظر آئے ، کبھی ڈرون حملے میں […]

Continue Reading

کم تر

کم تر تحریر محمد اظہر حفیظ کچھ لوگ دوسروں کو کم تر سمجھتے ھیں ۔ وہ بہن بھائی بھی ھوسکتے ھیں،رشتہ دار بھی اور دوست احباب بھی۔  مجھے تو آج تک کوئی بھی انسان چھوٹا یا کم تر نظر ھی نہیں آیا۔ سب میرے سے بہتر ھی ھیں۔ لفظ سنا تھا اچھوت، شودر شاید انڈیا میں ھوتے ھونگے۔ یہاں تو کبھی دیکھے نہیں۔ میں ایک عجیب انسان ھوں اور سب کو انسان سمجھتا ھوں۔ پر ھمارے اردگرد رھنے والے شاید […]

Continue Reading

آپ کی بات بلکل ٹھیک ھے میری بھی سن لیں

آپ کی بات بلکل ٹھیک ھے میری بھی سن لیں تحریر محمد اظہر حفیظ بشیر باجوہ ایک شاندار فنکار اور مکینیکل آرٹسٹ ھے۔ کچھ عرصہ میری ایڈورٹائزنگ ایجنسی میں میرے ساتھ کام کیا۔ بہت اچھا تعلق آج تک ھے۔ اکثر وہ ڈیزائن بنا کر لاتا تو مجھے غصہ آجاتا ۔ جو بھی برا بھلا کہہ سکتا تھا کہہ دیتا تو بشیر باجوہ مسکرا کر کہتا سر تہاڈی گل سولہ آنے ٹھیک اے پر میری وی سن لو ۔ میں اس […]

Continue Reading

ناکردہ گناہ

ناکردہ گناہ تحریر محمد اظہر حفیظ میں نے ھمیشہ ھر اس کام کی معافی مانگی جو میں نے کیا ھی نہیں۔ تاکہ تعلق بچ جائے رابطے استوار رھیں ۔ زندگی میں ناکردہ گناہوں کی بھی بہت سی سزا بھگتی۔ لوگوں کے جھوٹ کو لوگوں نے سچ جانا اور ھمیں سزا وار ٹھہرایا انکو کچھ نہیں کہا پر اپنے جسم میں صبح شام رات تین وقت انسولین لگاتے ھوئے صرف انیس سال ھوگئے ھیں اور جن کے جھوٹ سے اور جھوٹی […]

Continue Reading

فادرز ڈے اور کرکٹ

فادرز ڈے اور کرکٹ تحریر محمد اظہر حفیظ اباجی جب بھی کرکٹ کا میچ دیکھتے تھے تو اکثر انجیسڈ کی گولی زبان کے نیچے رکھتے تھے اور میچ کے ساتھ ساتھ سب کا حساب بھی برابر کرتے جاتے تھے جس لیول کی غلطی اسی کے مطابق سزا سناتے جاتے تھے۔ زیادہ تر وہ اکیلے میچ دیکھتے تھے اور اگر کوئی ساتھ دیکھنے بیٹھ جائے تو ٹی وی کے ساتھ ساتھ اس کو بھی ایک آدھ جوتی یا گالی پڑ جاتی […]

Continue Reading

بے بس

بے بس تحریر محمد اظہر حفیظ اللہ کسی کو بے بسی نہ دکھائے۔ مجھے یاد ھے میری امی جی آخری سانسیں لے رھی تھی اور میں گلیوں میں دوڑتا پھر رھا تھا ریسکیو 1122 شاید راستہ بھول گئی ھے پھر گھر واپس آتا۔ بیوی بچوں کو دلاسہ دیتا اور پھر باھر بھاگ جاتا کبھی انکو کال کرتا جی ایمبولینس آپ کی طرف ھی گئی ھے۔ اور امی جی کلمہ پڑھتے اپنے خالق حقیقی سے جاملیں۔ اور گاڑی آگئی در اصل […]

Continue Reading

ماں

ماں تحریر محمد اظہر حفیظ میری ماں جی کی ماں جی ھماری نانی بہت پہلے فوت ھوگئیں تھی پھر ھمارے نانا جی نے ھماری امی جی اور خالاوں کو پالا۔ امی جی اکثر نانی جی کو یاد کرکے رونے لگ جاتی تو مجھے سمجھ نہیں آتی تھی کہ اب یہ خود نانی دادی بن گئی ھیں۔ اب اس میں رونے والی کیا بات ھے۔فوت سب نے ھونا ھے میں کئی دفعہ رونے کی وجہ پوچھتا تو کہتیں بابو تجھے سمجھ […]

Continue Reading

اختلافی نوٹ

اختلافی نوٹ تحریر محمد اظہر حفیظ کچھ دانشور حضرات ساری زندگی دوسروں کی غلطیاں ڈھونڈنے میں گزار دیتے ھیں۔ اور انکو ساری زندگی کوئی اچھائی کسی میں بھی نظر نہیں آتی۔ اس سلسلے میں وہ قرآن اور حدیث پڑھنے سے بھی گریز نہیں کرتے بس ھر جگہ نعوذ باللہ غلطیاں تلاش کرتے ھیں۔  کہ شاید کسی جگہ پر کوئی غلطی پکڑی جائے اور دل و دماغ اتنے پتھر کے ھو چکے ھوتے ھیں کہ ان کو اچھائی نظر ھی نہیں […]

Continue Reading

پگڑی

پگڑی تحریر محمد اظہر حفیظ میں گاوں میں رھتا تھا لائلپور میں غلام محمد آباد شاھین چوک دیکھا تھا کیونکہ میرے نانا جی ، خالہ اور ماموں وھاں رھتے تھے اور حاجی آباد دیکھا تھا وھاں میرے چچا جی رھتے تھے۔ اس کے علاوہ میری بہت بڑی سیر نزدیکی قصبہ ڈجکوٹ جانا ھوتی تھی وہ بھی میلہ یا بیماری کی صورت میں۔ میرا بڑا دل کرتا تھا جب دوستوں بزرگوں سے سنتا تھا کہ گھنٹہ گھر اور اس کے اردگرد […]

Continue Reading
You can enable/disable right clicking from Theme Options and customize this message too.